Urdu News

                 پاکستان میں انٹرنیشنل کرکٹ کی بحالی خوش آئند ہے، مکی آرتھر

 

لاہور: قومی کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ مکی آرتھر نے کہا کہ پاکستان میں انٹرنیشنل کرکٹ کی بحالی پاکستان کرکٹ کے لیےخوش آئند ہے۔

پاکستان کے طویل عرصے سے ویران میدان رواں ماہ ایک بار پھر آباد ہوجائیں گے اور ورلڈ الیون پاکستان کا دورہ کرے گی جہاں 3 ٹی ٹوئنٹی میچز کھیلے جائیں گے۔

ورلڈ الیون کے دورے سے پاکستان میں ایک بار پھر انٹرنیشنل کرکٹ کی راہ ہموار ہونے کی امید کی جارہی ہے جب کہ ورلڈ الیون کے دورے پر پاکستان کے سابق کرکٹرز بھی خوشی سے نہال ہیں۔

قومی ٹیم کے ہیڈ کوچ مکی آرتھر  نے کہا ہے کہ پاکستان میں انٹر نیشنل کرکٹ طویل عرصے سے نہیں ہورہی اور پاکستان میں انٹرنیشنل کرکٹ کی بحالی ملک کے لیے خوش آئند ہے۔

انہوں نے کہا کہ اگلے چند ہفتوں میں7 ٹی 20 میچز کاپاکستان میں انعقاداچھی خبر ہے اور کھلاڑی اچھا کھیلنے کے لیے بے تاب ہیں جب کہ شائقین بھی سپورٹ کریں گے۔

دوسری جانب فیلڈنگ کوچ اسٹیو رکسن کا کہنا ہےکہ پاکستان کے شائقین لمبے عرصے سےانٹرنیشنل کرکٹ کے منتظر تھے اور یہ موقع ہے کہ پاکستان کے شائقین کرکٹ کو سپورٹ کرنے اسٹیڈیم آئیں۔

      عمران خان کا ٹرمپ کے الزامات پر قومی اسمبلی کا خصوصی اجلاس بلانے کا مطالبہ

چیرمین تحریک انصاف عمران خان نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے پاکستان پر لگائے جانے والے الزامات پر قومی اسمبلی کا خصوصی اجلاس بلانے کا مطالبہ کیا ہے۔ 

اسلام آباد میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے عمران خان کا کہنا تھا کہ پہلے بھی کہا تھا کہ یہ جنگ ہماری نہیں اس میں شرکت نہیں کرنا چاہیے، امریکا کے کہنے پر اس ملک میں جو تباہی مچائی اس میں 70 ہزار پاکستانیوں نے قربانیاں دیں۔

عمران خان نے کہا کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو افغان خطے سے متعلق کچھ علم نہیں اور جس ملک نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں قربانیاں دیں اسی پر الزام لگادیا۔

چیرمین تحریک انصاف نے کہا کہ ٹرمپ وہی زبان استعمال کر رہا ہے جو بھارت پاکستان کے خلاف استعمال کرتا ہے جب کہ افغانستان میں بھارت کو نیا کردار دے دیا گیا ہے۔

عمران خان نے کہا کہ افسوس کے ساتھ کہنا پڑتا ہے کہ حکومت نے امریکی الزامات پر درست انداز میں دفاع نہیں کیا، نہ تو وزیراعظم اور نہ ہی وزارت خارجہ کی جانب سے کوئی بیان سامنے آیا۔

عمران خان نے کہا کہ فوج اور سویلین ایک پیج پر ہیں، امریکی دھمکی کے بعد پارلیمنٹ کا خصوصی اجلاس بلا کر امریکا کو متفقہ پیغام دینا چاہیے۔

چیرمین تحریک انصاف کا کہنا تھا کہ پاکستان کے خلاف مہم چل رہی تھی اور ہمارے وزیر خارجہ ہی نہیں تھے، آج آدھا افغانستان وہاں کی حکومت کے کنٹرول میں نہیں ہے، امریکا حالات پر قابو نہیں پا سکا تو پاکستان کیسے ذمے دار ہوگیا، وزیر اعظم کو امریکا کی پالیسی پر سخت رد عمل دینا چاہیے۔

عمران خان نے کہا کہ امریکا نے پاکستان کے ایٹمی پروگرام پر نظر لگا رکھی ہے، امریکی پاکستان کے علاقے میں آگئے تو اس کے پیشگی اثرات پر اتفاق رائے پیدا کیا جائے اور نئے وزیراعظم کو نواز شریف کی فکر کے بجائے امریکا سے متعلق اتفا ق رائے پیدا کرنا چاہیے

      پاناما پیپرز میں نام: امیتابھ سمیت 33 بھارتیوں کے خلاف تحقیقات شروع

 

بالی وڈ کے بگ بی امیتابھ بچن کا نام پاناما پیپرز میں آنے کے بعد بھارتی حکام نے باقاعدہ طور پر تحقیقات کا آغاز کردیا۔

بالی وڈ سپر اسٹار امیتابھ بچن سمیت 33 بھارتی شخصیات کے نام پاناما پیپرز میں آنے کے بعد انکم ٹیکس ڈیپارٹمنٹ نے باقاعدہ طور پر کارروائی کا آغاز کردیا۔

حکام کے مطابق انکم ٹیکس ڈیپارٹمنٹ کے اعلیٰ افسران پر مشتمل ٹیم معلومات اکٹھی کرنے کے لئے برٹش ورجن آئرلینڈ بھیج دی گئی ہے جب کہ دیگر ممالک سے بھی معلومات حاصل کی جارہی ہیں۔

انکم ٹیکس حکام کے مطابق امیتابھ بچن کی برٹش ورجن آئرلینڈ میں کسی آف شور کمپنی سے متعلق ابھی کچھ نہیں کہا جاسکتا اور یہ بھی نہیں کہہ سکتے کہ ان کے خلاف کوئی تحقیقات شروع کی گئیں تاہم ابھی معلومات حاصل کی جارہی ہیں۔

حکام کے مطابق امیتابھ بچن پہلے ہی کہہ چکے ہیں کہ پاناما پیپرز میں ان کے نام سے ظاہر کی گئی کمپنیوں کا ان سے کوئی تعلق نہیں جب کہ امیتابھ بچن متعدد بار بیرون ملک آف شور کمپنیوں کی تردید کرچکے ہیں۔

پاناما پیپرز میں امیتابھ بچن کو بلک شپنگ کمپنی لمیٹیڈ، لیڈی شپنگ لمیٹیڈ، ٹریژر شپنگ لمیٹیڈ اور ٹرام شپنگ لمیٹیڈ کمپنی کا ڈائریکٹر ظاہر کیا گیا ہے تاہم بالی وڈ سپر اسٹار کا کہنا ہے کہ وہ کبھی ان کمپنیوں کے ڈائریکٹر نہیں رہے اور ممکن ہے کہ ان کا نام اس میں استعمال کیا گیا ہو۔

امیتابھ بچن کا کہنا ہے کہ وہ مسلسل ٹیکس ادا کرتے رہے ہیں اور بیرون ملک خرچ کردہ رقم پر بھی وہ ٹیکس دیتے آئے ہیں۔

خیال رہے کہ لاء فرم موسیک فانسیکا نے پاناما پیپرز میں 50 سے زائد ممالک کے 140 ایسے سیاستدانوں کا انکشاف کیا ہے جو آف شور کمپنیاں رکھتے ہیں جب کہ پاناما پیپرز میں سیاستدانوں کے علاوہ تجارت، کھیل اور شوبز انڈسٹریز سے تعلق رکھنے والی شخصیات کے نام بھی ہیں۔

بھارتی میڈیا کے مطابق پاکستان کے سابق وزیراعظم نواز شریف کی پاناما کیس میں نااہلی کے بعد بھارت میں بھی پاناما پیپرز پر کارروائی کے لئے اداروں پر دباؤ بڑھنے لگا اور عوامی دباؤ کے نتیجے میں ہی انکم ٹیکس ڈیپارٹمنٹ حرکت میں آچکا ہے

        لوئر دیر میں ملیریاتیزی سے پھیلنے لگا،تشخیصی سینٹر بند

لوئر دیر میں ملیریاتیزی سے پھیلنے لگا،تشخیصی سینٹر بند

لوئر دیر میں ملیریا تیزی سے پھیل رہا ہے۔مرض کی تشخیص کےلیے بنایا گیا سینٹر9ماہ سے بند ہے جس سے مریضوں کو مشکلات کا سامنا ہے ۔

لوئر دیر کے مختلف علاقوں میں ان دنوں ملیریا کا مرض تیزی سے پھیل رہاہے۔ڈسٹرکٹ اسپتال تیمرگرہ میں ملیریا سے بچاؤ کے ادویات اور تشخیصی ٹیسٹ کے لئے بنایا گیا سینٹر گزشتہ نو ماہ سے بند ہے، جس کی وجہ سے مریضوں کو مشکلات کا سامنا ہے۔

اسپتال کے ایم ایس ڈاکٹر حنیف نے الزام لگایاہے کہ ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر ڈاکٹر شوکت علی کے کہنے پر ڈی ایچ کیو کے فوکل پرسن سید محمود کو نجی اسپتال میں تعینات کیاگیا ہے جس کی وجہ سے سینٹربند ہے اور مریضوں کو مشکلات پیش آرہی ہیں

      ٹیوب لائٹ کی ناکامی: سلمان خان نے ڈسٹری بیوٹرز کو 35 کروڑ ادا کردیئے

 

بالی وڈاسٹار سلمان خان نے فلم ’’ٹیوب لائٹ‘‘ کی باکس آفس پر ناکامی کے بعد ڈسٹری بیوٹرز کو 35 کروڑ ادا کرکے نقصان کا ازالہ کردیا۔

سلمان خان کی فلم ’’ٹیوب لائٹ‘‘ باکس آفس پر بری طرح فلاپ ہوگئی تھی اور فلم اپنے بجٹ کی رقم ہی بمشکل سے پوری کرپائی تھی۔

فلم کا بجٹ 100 کروڑ سے زائد تھا لیکن فلم بھارت میں 121 کروڑ ہی کما سکی تھی جب کہ فلم کی ناکامی نے مداحوں کے ساتھ ساتھ دبنگ خان کو بھی پریشان کردیا تھا۔

فلم کی کم کمائی کے باعث سنگل اسکرین ڈسٹری بیوٹرز کو بڑا نقصان ہوا تھا اور انہوں نے سلمان خان سے نقصان کے ازالے کا مطالبہ کیا تھا۔

ڈسٹری بیوٹرز کو 50 کروڑ سے زائد کا نقصان ہوا تھا جس کا سلمان نے ازالہ کرنے کا وعدہ کیا تھا  جو انہوں نے پورا کردیا ہے۔

سلمان خان نے مختلف ایوارڈز کی تقریبات میں مصروفیت کے باعث اب ڈسٹری بیوٹرز کو نقصان کا 40 فیصد ادا کردیا اور انہوں نے 35 کروڑ سے زائد کی رقم واپس لوٹا دی ہے۔

فلموں کے کاروبار پر گہری نظر رکھنے والے کومل نہتا نے بھی سلو میاں کی جانب سے ڈسٹری بیوٹرز کے نقصان کا ازالہ کرنے کی تصدیق کردی ہے۔

واضح رہے کہ فلم ٹیوب لائٹ میں میں سلمان خان، سہیل خان اور چینی اداکارہ ژو ژو نے اہم کردار میں نظر آئیں تھی اور کنگ خان بھی مختصر کردار میں جلوہ گر ہوئے ہیں

               الزامات در الزامات: حمیرا ارشد اور احمد بٹ میں پھر صلح

 

لاہور: حمیرا ارشد اور احمد بٹ نے ایک دوسرے پر الزامات عائد کرنے کے بعد ایک  بار پھر صلح کرلی۔

حمیرا ارشد اور احمد بٹ کا معاملہ ایک بار پھر عدالت تک گیا جہاں کہانی میں بدلاؤ آیا اور ایک دوسرے پر الزامات کرنے والوں نے صلح کرلی جس کےبعد عدالت نے بھی ضمانتیں منظور کرلیں۔

اس سے قبل حمیرا نے اپنے شوہد احمد بٹ پر الزام لگایا تھا کہ احمد نے ساتھیوں سے مل کر گھر پر حملہ کیا اور ان کے دو بھتیجوں کو تشدد کا نشانہ بنایا جب کہ ساتھ ہی دھمکی دی کہ وہ ان پر توہین رسالت کا الزام لگادیں گے۔

حمیرا ارشد کا کہنا تھا کہ احمد گھر کو اپنے نام کروانا چاہتے ہیں اسی لیے وہ ان پر تشدد کر رہے ہیں ۔

گلوکارہ کے مطابق ان کے شوہر کے حملے کے بعد انہوں نے پولیس کو شکایت کی جس پر پولیس نے احمد بٹ اور ان کے ساتھیوں کو حراست میں لیا۔

جیو نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے حمیرا ارشد نے بتایا کہ احمد نے ان کو اپنے چار سالہ بچے سے دور کرنے کی بھی کوشش کی ہے،احمد مکان کے بدلے بچے کو سپرد کرنے سے مکر گئے ہیں۔

دوسری جانب احمد بٹ کا کہنا ہے کہ گھر کا کوئی مسئلہ نہیں وہ اس بارے میں باہر آکر بتائیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ حمیرا بیٹے کو شوبز میں لانا چاہتی ہیں لیکن وہ اسے ڈاکٹر بنانا چاہتے ہیں۔

واضح رہے کہ اس سے قبل بھی حمیرا ارشد اور ان کے شوہر احمد بٹ کے درمیان کافی جھگڑے ہوئے ہیں جس پر حمیرا نے خلع کا دعوی کیا تھا تاہم صلح کے  بعد حمیرا نے خلع کا فیصلہ ترک کردیا تھا

        پنجاب کے تعلیمی اداروں میں انرجی ڈرنکس کیخلاف آج سے کارروائی کا آغاز

 

پنجاب کے تعلیمی اداروں اور اس کے اطراف کولا اور انرجی ڈرنکس کی فروخت بند کرنے کے لئے دی گئی ڈیڈ لائن ختم ہونے کے بعد آج سے انرجی ڈرنکس کے خلاف آپریشن شروع ہوگا۔

پنجاب فوڈ اتھارٹی نے صوبے بھر کے تعلیمی اداروں میں انرجی ڈرنکس کی فروخت بند کرنے کی 14 اگست تک ڈیڈ لائن دی تھی اور مقررہ مدت پوری ہونے کے بعد آج سے پنجاب فوڈ اتھارٹی کی جانب سے تعلیمی اداروں کے اطراف انرجی ڈرنکس کی فروخت کے خلاف آپریشن شروع کیا جائے گا۔

ڈائریکٹر جنرل پنجاب فوڈ اتھارٹی نورالامین مینگل کے مطابق ایجوکیشنل انرجی اور کولا ڈرنکس پر پابندی انسٹیٹیوشنل فوڈ سٹینڈرڈ ریگولیشنز 2017 کے تحت صوبے بھر کے تمام سرکاری، نجی تعلیمی اداروں، اکیڈمیز اور کوچنگ سینٹرز کی 100 میٹر کی حدود میں لگائی گئی ہے۔

ڈی جی پنجاب فوڈ اتھارٹی کے مطابق پابندی سائنٹیفک پینل کی سفارشات کی روشنی میں لگائی گئی ہے کیوں کہ کاربونیٹڈ کولا ڈرنکس اور انرجی ڈرنکس میں موجود فاسفورک ایسڈ اور کیفین بچوں کی نشونما خصوصاً ہڈیوں کے لیے نقصان دہ ہے۔

نوالامین کے مطابق پابندی کے تحت متعین کردہ حدود میں کاربونیٹڈ انرجی ڈرنکس اور کولا ڈرنکس فروخت نہیں ہو سکیں گیں اور خلاف ورزی کی صورت میں سخت کارروائی کی جائے گی

براون چاول کی افادیت

براون چاول کی افادیت

 

سفید چاول کے نسبت براون چاول صحت کے لیے زیادہ مفید ہوتے ہیں۔

یہ بات ایک آرٹیکل میں بتائی گئی۔ چاول خوراک میں اہم جز مانا جاتا ہے خاص طور پر ایشیائی باشندے چاولوں سے لذیذ کھانے بناتے ہیں اور میٹھے پکوانوں میں بھی ان کا استعمال کرتے ہیں۔ ان غذاؤں میں زیادہ تر سفید چاول استعمال کیا جاتا ہے جو کہ براؤن چاول سے ہی نکلتا ہے ۔جب چاول کی اوپری سطح کو چھیل دی جاتا ہے تو اندر سے سفید چاول نکلتا ہے۔

چاول سے کاربوہائیڈریٹ اور بھر پور غذائیت حاصل ہوتی ہے ۔سفید چاول کے بنسبت براؤن چاول زیادہ غذائیت اور بھرپور طاقت فراہم کرتا ہے ۔یہ کولیسٹرول کو کم کرتا ہے، دل کے دورے سے بچاتا ہے اور ذیابیطس کو بڑھنےسے روکتا ہے۔

فائبر:

فائبر کی فراہمی صحت کے لئے انتہائی اہم ہے۔ یہ قبض کو ہونے سے روکتا ہے۔ بلڈ پریشر، شوگر کے لیول کو بڑھنے سے روکتا ہے اور وزن کو متوازن رکھتا ہے ۔ فائبر دیگر بیکٹیریا سے بھی بچاتا ہے ۔براؤن چاولوں میں فائبر وافر مقدار میں پایا جاتا ہے جو کہ ان تمام شکایت سے تحفظ فراہم کرتا ہے اور ساتھ ہی کولن کینسر اور بریسٹ کینسر جیسے خطرناک امراض سے بھی بچاتا ہے۔ سفید چاول کے نسبت براؤن چاول میں زیادہ فائبر موجود ہوتا ہے۔

میگنیشیم:

میگنیشیم جسمانی غذائیت کے لئے اہم خوراک ہے جس سے جسمانی قوت میں اضافہ ہوتا ہے۔ یہ ہڈیوں کو مضبوط  کرتا ہے اور پٹھوں کے اکڑنے کی شکایت سے بچاتا ہے اور جسمانی سیلز میں اضافہ کرتا ہے۔ براؤن چاول میں قدرتی طور پر میگنیشیم کی طاقت بھی پائی جاتی ہے جو کہ صحت کے لئے انتہائی موثر ہے۔

 فائٹو نیوٹرینٹ:

فائٹو نیوٹرینٹ دراصل پودوں میں پائے جاتے ہیں جس کے اندر زہریلے جراثیم سے بچنے کی طاقت ہوتی ہے۔ براؤن چاول ایک سے بھرپور فائیٹو نیوٹرینٹ غذا ہے۔ سفید چاول میں فائیٹو نیوٹرینٹ کی خاصیت موجود نہیں ہوتی

گلائسیمک انڈیکس:

براؤن چاول میں سفید چاول کے نسبت کم گلا ئسیمک انڈیکس پایا جاتا ہے۔ گلا ئسیمک انڈیکس کا کم ہونا ذیابیطس مریضوں کے لئے بے حد مفید ہے کیونکہ یہ شوگر لیول کو بڑھاتی ہے۔ بروان چاول شوگر کے لیول کو متوازن رکھتے ہیں اور موٹاپے کی شکایت ہونے سے روکتے ہیں

دانتوں اور مسوڑھوں کی تکلیف سے بچنے کے نسخے

دانتوں اور مسوڑھوں کی تکلیف سے بچنے کے نسخے

اکثر اوقات ہم کھانے پینے میں بے احتیاطی سے کام لیتے ہیں اور ٹھنڈا گرم کا ایک ساتھ استعمال کرلیتے ہیں جس سے دانتوں کے ساتھ مسوڑھوں میں بھی تکلیف کی شکایت ہوتی ہے لیکن اب ماہرین نے گھریلوں ٹوٹکوں سے اس تکلیف کا حل تلاش کرلیا ہے۔

مسوڑھوں میں جلن، درد ،سوجن یا خون نکلنے کی شکایت وٹامن کی کمی، ہارمونز میں تبدیلی، ذیابیطس اور سکروی امراض کے باعث پیدا ہوتی ہے۔ دانتوں اور مسوڑھوں کی اکثر تکلیف دانتوں پر برش غلط طریقے سے استعمال کرنا یا پھر برش نا کرنے کی صورت میں بھی رونما ہوجاتی ہیں جس کے باعث دانتوں میں پیلاہٹ اور کیڑا بھی لگ جاتا ہے۔

دانتوں اور مسوڑھوں کو مضبوط رکھنے کے لیے ضروری ہے کہ صحت مند خوراک کا انتخاب کیا جائے۔

غذا کا درست تعین:

ایسی خوراک لینے سے پرہیز کرنا چاہیے جس میں مٹھاس زیادہ مقدار میں شامل ہو کیونکہ زیادہ مٹھاس مسوڑھوں اور دانتوں کے لیے مضر ہے اس سے دانت اور مسوڑھے کمزور ہوجاتے ہیں پھر دانتوں میں گندگی پیلاہٹ اور کیڑا لگنے لگتا ہے۔

اس سے بچاو کے لیے لازمی ہے کہ کوئی بھی میٹھی چیز کھانے کے بعد دانتوں کی صفائی کی جائے جب کہ مسوڑھوں اور دانتوں کے لیے ضروری ہے کہ پانی خوب پیا جائے۔

کیلشیم:

صحت مند رہنے کے لیے درست غذا کا انتخاب کرنا انتہائی ضروری ہوتا ہے ۔اگر غذا ہی ایسی کھائی جائے جس سے کیلشیم پروٹین کی فراہمی نا ہو تو صحت متاثر ہوجاتی ہے۔ کیلشیم کی کمی مسوڑھوں اور دانتوں کی جڑوں کو کمزور کر دیتی ہے جس کے نتیجے میں مسوڑھوں میں درد، سوجن اور دیگر شکایات سے دوچار ہونا پڑتا ہے۔

دانتوں اور مسوڑھوں کی حفاظت کے لیے دودھ پینا چاہیے کیوں کہ دودھ وافر مقدار میں کیلشیم فراہم کرتا ہے ۔

نمکین پانی:

نمکین پانی سے دانتوں کو صاف کرنا ایک پرانا ٹوٹکا ہے جو کہ انتہائی مفید ہے اس سے دانتوں کی پیلاہٹ اور بیکٹیریا دور ہوتا ہے۔ نمکین پانی میں بیکنگ سوڈا اور لیمو ملا کر دانتوں کی صفائی کی جائے تو مسوڑھوں کی تکلیف بھی دور ہوتی ہے ساتھ ہی دانتوں کی پیلاہٹ بھی چلی جاتی ہے۔

رسیلے پھلوں کا استعمال کرنا:

وٹامن سی کی کمی کی وجہ سے مسوڑھوں سے خون آنے لگتا ہے جس سے منہ میں بدبو بھی پیدا ہو جاتی ہے کیوں کہ مسوڑھوں میں بہت زیادہ خون آنے کی وجہ سے جگر میں خرابی ہوجاتی ہے۔

وٹامن سی کی کمی کو پورا کرنے کے لیے ضروری ہے کہ رسیلے پھلوں کی خوراک لی جائے ۔نارنجی، تربوز، لیمو، آملہ، ناشپتی یہ تمام پھل وٹامن سی کی کمی کو دور کرتے ہیں۔ان کے استعمال سے دانت اور مسوڑھے مضبوط ہوتے ہیں

چہرہ کے حسن کو برقرار رکھنے کے لیے لال صندل مفید

چہرہ کے حسن کو برقرار رکھنے کے لیے لال صندل مفید

ماہرین کے مطابق لال صندل چہرے کی متعدد شکایات کو دور کردیتی ہے اور حسن کو برقرار رکھنے میں مدد دیتی ہے۔

چہرے پر دھول مٹی سے کیل مہاسے اور داغ دھبے کی شکایات عام ہیں جس سے چہرہ کی رونق ہلکی پڑ جاتی ہے۔

جِلدی ماہرین کے مطابق چہرے کی حفاظت کے لیے قدرتی اشیاء کا استعمال کرنا زیادہ مفید ہے کیونکہ چہرے کی جلد حساس ہوتی ہے اس لیے کیمیکل کا استعمال کرنا اکثر نقصان دہ ثابت ہوجاتا ہے۔

صندل کی لکڑی اور سادہ صندل آسانی سے مل جاتی ہے لیکن لال صندل آسانی سے نہیں پائی جاتی۔مارکیٹ میں اکثر صرف لال صندل کا پاوڈر دستیاب ہوتا ہے۔ اس کا پاوڈر آسانی سے پنساری کی دکان پر دستیاب ہوتا ہے۔

ماہرین کے مطابق لال صندل کو دیگر قدرتی اشیاء کے ساتھ استعمال کر کے چہرے کی بیشر شکایات سے چھٹکارا پایا جاسکتا ہے۔

اگر چہرے کی جلد خشکی کا شکار ہے تو اس کے لیے بہترین طریقہ ہے کہ ناریل کے تیل کے ساتھ لال صندل کو ملائیں اور پیسٹ بنا کر چہرے پر لگایا جائے۔

اس پیسٹ کو 10 سے 15 منٹ لگا کر خشک کریں اور پھر ٹھنڈے پانی سے دھو لیں۔لال صندل جلد کی خشکی دور کرکے چہرہ کو پر رونق کرنے میں کار آمد ثابت ہو گی۔

جہاں چہرے پر خشکی کی شکایت ہوتی ہے وہیں کئی چہرے بہت زیادہ آئلی بھی ہوتے ہیں۔ اس کے لیے لال صندل میں لیموں کے قطرے شامل کر کے پیسٹ بنا کر چہرے پر لگانے سے آئلی جلد کی شکایت دور ہوجاتی ہے۔

اس پیسٹ کو لگانے کے بعد چہرہ نیم گرم پانی سے دھونا چاہیئے۔لال صندل سیبم کو جلد میں جذب کرنے میں مدد فراہم کرتی اور ساتھ ہی جلد کے مسام کو مضبوط کرتی ہے۔

چہرے پرکیل مہاسے اور داغ دھبے ختم کرنے میں لال صندل انتہائی مفید ہے ۔ لال صندل پاوڈر میں گلاب کا پانی، شہد اور ایک چٹکی ہلدی ڈال کر پیسٹ بنا کر چہرے پر لگانے سے ان تمام شکایات سے بچا جاسکتا ہے۔

ساتھ ہی ایکنی سے ہونے والی چبھن اور خارش کا بھی خاتمہ ہوتا ہے کیونکہ لال صندل میں جلد کو ٹھنڈا اور تازگی بخشنے والی خصوصیات شامل ہیں۔

چہرے کی رنگت کو نکھارنے کے لیے لال صندل پاوڈر میں دودھ، دہی اور ہلدی ملا کر پیسٹ لگانا چہرہ کی رنگت نکھار دیتا ہے یہ جلد کی دو رنگ کی  شکایت کو بھی دور کردیتی ہے۔

اس کا پیسٹ ہفتہ میں دو بار استعمال کیا جائے۔ لال صندل کو صرف دودھ میں ملا کر بھی روزلگانے سے آنکھوں کے ہلکے بھی دور ہوجاتے ہیں۔

دھوپ میں زیادہ دیر تک رہنے سے چہرہ سورج کی شعاعوں سے متاثر ہوجاتا ہے جس کے نتیجے میں چہرے پر سرخ دھبے پڑجاتے ہیں۔اس کے لیے کھیرے کا رس، دہی اور لال صندل کا پیسٹ دھوپ سے پیدا ہونے والے نشانوں کے خاتمے کے لیے مؤثر ہے

جسمانی درد کے خاتمے میں مؤثر جڑی بوٹیوں کے تیل

جسمانی درد کے خاتمے میں مؤثر جڑی بوٹیوں کے تیل

ماہرین کے مطابق کچھ جڑی بوٹیوں کے تیل میں انالجیسک (درد کو کم کرنے)  یعنی سوزش کو دور رکھنے کی خصوصیات شامل ہوتی ہیں جس کے باعث درد سے تحفظ فراہم ہوتا ہے۔

گھٹنے کا درد اکثر براہ راست چوٹ لگنے سے ہوتا ہے یا پھر پروٹین اور کیلشم کی کمی کے باعث اس کی شکایت سامنے آتی ہے۔

قدرتی اشیاء کے تیل نہایت مفید ہیں اور قدرتی طور پر تیل میں دونوں قسم کی یعنی ٹھنڈی اور گرم تاسیر پائی جاتی ہے جو کہ گھٹنے کی درد کی شکایت سے لے کر جلد کی اور جلن سوجن کو دور کرنے میں مدد فراہم کرتی ہے۔

تلسی کا تیل:

تلسی کے تیل میں اینٹیسپوڈک ہوتا ہے جو پٹھوں کی اکڑن کو کم کرتا ہے۔ اس سے گھٹنے کا درد اور سوزش کی شکایت دور ہوجاتی ہے جب کہ یہ زخم کو ختم کرنے اوراینٹی سیپٹک کی تکلیف میں بھی مؤثر ہے۔

یوکلپٹس کا تیل:

یوکلپٹس کا تیل جسم میں تیزی سےجذب ہوجاتا ہے اس کا طاقتورایکلپٹول کمپاؤنڈ ایک ویزوڈیلیٹر کے طور پر کام کرتا ہے جو کہ خون کی گردش کو تیزی فراہم کرتا ہے جس کے تحت ہڈیوں میں کھچاؤ، درد اور سوزش کی شکایت ختم ہوجاتی ہے۔

ادرک کا تیل:

ادرک حفظان صحت کے لیے انتہائی مفید ہے اس کے کئی فوائد موجود ہیں۔ ادرک کا تیل ہڈیوں، جوڑوں اور گھٹنے کی شکایات کے لیے انتہائی مفید ہے ۔اس میں اینٹی بیکٹیریل اور سوزش کو دور کرنے والی خصوصیات شامل ہیں۔ جو تحفظ فراہم کرتی ہے ساتھ ہی ماہرین کے مطابق اس کا تیل کان کے درد کے لئے بھی مفید ہے۔

 لیوینڈر کا تیل:

لیوینڈر کا تیل حفظان صحت کی تمام خصوصیات سے بھر پور ہے ۔یہ خون کی گردش کو جسم کے ہر اعضاء تک پہنچانے میں مدد فراہم کرتا ہے۔ اس کو دماغ میں لگانے سے دماغی دباؤ ، سر درد اورسر کی خشکی دور ہوجاتی ہے جب کہ درد، سوجن اور سوزش سب کا خاتمہ لیونڈر تیل سے ممکن ہے۔

ونٹرگرین کا تیل:

اس پودے کا تیل گھٹنے اور جوڑوں کے درد کے لیے تو مفید ہ ہے ہی، ساتھ ہی گردے کی شکایت کو بھی دور کرنے میں مؤثر ہے ۔جسم پر اس تیل کی مالش جسم کے اعضاء میں چستی پیدا کرتی ہے اور دن بھر کی تھکن کو دور کرتی ہے.

زیتون کا تیل:

زیتون کا تیل بھی ہڈیوں، جوڑوں اور پھٹوں کی شکایت کا خاتمہ کرنے میں نہایت مؤثر ہے۔ ماہرین کے مطابق بچوں کی مالش زیتون کے تیل سے کرنی چاہیے اس سے ان کی ہڈیاں بنیادی طور پر مضبوط ہوتی ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *